صفحات

ہفتہ، 13 فروری، 2016

183۔ بڑھتی رہے خدا کی محبت خداکرے

کلام محمود صفحہ252۔253

183۔ بڑھتی رہے خدا کی محبت خداکرے


بڑھتی رہے خدا کی محبت خداکرے
حاصل ہو تم کو دید کی لذت خداکرے

توحید کی ہو لب پہ شہادت خداکرے
ایمان کی ہو دل میں حلاوت خداکرے

پڑ جائے ایسی نیکی کی عادت خداکرے
سرزد نہ ہو کوئی بھی شرارت خداکرے

حاکم رہے دلوں پہ شریعت خداکرے
حاصل ہو مصطفےٰؐ  کی رفاقت خداکرے

مٹ جائے دل سے زنگِ رذالت خداکرے
آجائے پھر سے دورِ شرافت خداکرے

مل جائیں تم کو زہد و امانت خداکرے
مشہور ہو تمہاری دیانت خداکرے

بڑھتی رہے ہمیشہ ہی طاقت خداکرے
جسموں کو چھو نہ جائے نقاہت خداکرے

مل جائے تم کو دین کی دولت خداکرے
چمکے فلک پہ تارۂ قسمت خداکرے

ٹل جائے جو بھی آئے مصیبت خداکرے
پہنچے نہ  تم کوکوئی اذیت خداکرے

منظور ہو تمہاری اطاعت خداکرے
مقبول ہو تمہاری عبادت خداکرے

سن لے ندائے حق کو یہ اُمت خداکرے
پکڑے بزور دامنِ ملت خداکرے

چھوٹے کبھی نہ جامِ سخاوت خداکرے
ٹوٹے کبھی نہ پائے صداقت خدا کرے

راضی رہو خدا کی قضا پر ہمیش تم
لب پر نہ آئے حرفِ شکایت خداکرے

احسان و لطف عام رہے سب جہان پر
کرتے رہو ہر اک سے مروت خداکرے

گہوارۂ علوم تمہارے بنیں قلوب
پھٹکے نہ پاس تک بھی جہالت خداکرے

بدیوں سے پہلو اپنا بچاتے رہو مدام
تقوٰی کی راہیں طے ہوں بَعُجلت خداکرے

سننے لگے وہ بات تمہاری بذو ق و شوق
دنیا کے دل سے دور ہو نفرت خداکرے

اخلاص کا درخت بڑے آسمان تک
بڑھتی رہے تمہاری ارادت خداکرے

پھیلاؤ سب جہان میں قولِ رسولؐ  کو
حاصل ہو شرق و غرب میں سَطوَت خداکرے

پایاب ہو تمھارے لیے بحرِ معرفت
کھل جائے تم پہ رازِ حقیقت خداکرےرہے

اُٹھتارہے ترقی کی جانب قدم ہمیش
ٹوٹے کبھی تمھاری نہ ہمت خدا کرے

تبلیغِ دین و نشرِ ہدایت کے کام پر
مائل رہے تمھاری طبیعت خدا کرے

سایہ فِگن رہے وہ تمھارے وجود پر
شامل رہے خدا کی عنایت خدا کرے

زندہ رہیں علوم تمھارے جہان میں
پایندہ ہو تمھاری لیاقت خدا کرے

سو سو حجاب میں بھی نظر آئے اُس کی شان
تم کو عطا ہو ایسی بصیرت خدا کرے

ہر گام پر فرشتوں کا لشکر ہو ساتھ ساتھ
ہر ملک میں تمھاری حفاظت خدا کرے

قرآن پاک ہاتھ میں ہو دل میں نور ہو
مل جائے مومنوں کی فراست خدا کرے

دجال کے بچھائے ہوئے جال توڑ دو
حاصل ہو تم کو ایسی ذِہانت خدا کرے

پرواز ہو تمھاری نُہ افلاک سے بلند
پیدا ہو بازوؤں میں وہ قوت خدا کرے

بطحا کی وادیوں سے جو نکلا تھا آفتاب
بڑھتا رہے وہ نورِ نبوت خدا کرے

قائم ہو پھر سے حکمِ محمدؐ جہان پر
ضائع نہ ہو تمھاری یہ محنت خدا کرے

تم ہو خدا کے ساتھ خدا ہو تمھارے ساتھ
ہوں تم سے ایسے وقت میں رُخصت خدا کرے

اک وقت آئے گا کہ کہیں گے تمام لوگ
ملت کے اس فدائی پہ رحمت خدا کرے

اخبار الفضل جلد9۔یکم جنوری 1955ء ربوہ۔ پاکستان